Ek Baar Kaho Tum Meri Ho | Ibn E Insha | Urdu Poetry | Classic Ghazal

0
0
108 days ago, 11 views
ہم گُھوم چکے بَستی بَن میںاِک آس کی پھانس لیے مَن میںکوئی ساجن ہو، کوئی پیارا ہوکوئی دیپک ہو، کوئی تارا ہوجب جیون رات اندھیری ہواِک بار کہو تم میری ہوجب ساون بادل چھائے ہوںجب پھاگن پُھول کِھلائے ہوںجب چندا رُوپ لُٹا تا ہوجب سُورج دُھوپ نہا تا ہویا شام نے بستی گھیری ہواِک بار کہو تم میری ہوہاں دل کا دامن پھیلا ہےکیوں گوری کا دل مَیلا ہےہم کب تک پیت کے دھوکے میںتم کب تک دُور جھروکے میںکب دید سے دل کو سیری ہواک بار کہو تم میری ہوکیا جھگڑا سُود خسارے کایہ کاج نہیں بنجارے کاسب سونا رُوپ کا لے جائےسب دُنیا، دُنیا لے جائےتم ایک مجھے بہتیری ہواک بار کہو تم میری ہوابنِ انشاء

SPONSORS

SPONSORS

SPONSORS